Prevention of Copy Paste


  • تازہ اشاعتیں

    جمعرات, اپریل 14, 2016

    3ڈوڈلر سہ جہتی پرنٹر


    3ڈوڈلر آپ کو ہوا میں خاکہ بنانے کی اجازت دیتا ہے 



    دنیا کا پہلا سہ جہتی چھاپنے والا قلم - ووبل ورکس کا 3 ڈوڈلر - کک اسٹارٹر میں 2013ء میں شروع کیا گیا جہاں اس نے صرف 34 دن میں 13 لاکھ سے زائد برطانوی پونڈ (20 لاکھ یو ایس ڈالر) کی صورت میں سرمایہ حاصل کیا۔ 

    یہ آلہ آپ کو اس قابل کرتا ہے کہ آپ مکمل سہ جہتی طور پر خاکوں کو کسی بھی سطح پر کسی بھی سافٹ ویئر یا کمپیوٹر کے بغیر بنا سکیں۔ ایک عام قلم کے برعکس 3ڈوڈلر سیاہی استعمال نہیں کرتا بلکہ وہ اے بی ایس یا پی ایل اے پلاسٹک کے مادّے کے ریشوں پر انحصار کرتا ہے جس کو زیادہ تر سہ جہتی پرنٹر استعمال کرتے ہیں۔

    اپنے زیادہ مہنگے ڈیسک ٹاپ ساتھیوں کی طرح 3ڈوڈلر تین ملی میٹر (0.1 انچ) پتلی پلاسٹک کی ڈوری کو گرم کرکے پرنٹ کرتا ہے جسے اس کے پیچھے موجود ہونا ضروری ہے۔ 3ڈوڈلر کو چلانے اور چند منٹوں تک اس کے گرم ہونے کا انتظار کرنے کے بعد ایل ای ڈی روشنی کا اشارہ نیلا ہوجاتا ہے جس کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ گرم پلاسٹک پگھل کر 3ڈوڈلر کی دھاتی نوک کے سوراخ سے نکل سکتا ہے - یہ قلم کا سب سے زیادہ خطرناک حصّہ ہے جو 270 ڈگری سیلسیس (518 ڈگری فارن ہائیٹ) تک گرم ہوسکتا ہے۔

    ایک مرتبہ جب گرم پلاسٹک نوک سے نکل جاتا ہے تو وہ تیزی سے مضبوط ، پائیدار صورت میں ٹھوس ہوجاتا ہے جس سے آپ مختلف شکلیں آسانی کے ساتھ بنا سکتے ہیں۔ کیونکہ گرم پلاسٹک کسی بھی سطح پر نکالا جاسکتا ہے بشمول دوسرے پلاسٹک کے یہاں تک کہ آئی فون کے کیس کو بھی مختلف رنگوں میں ذاتی طور پر بنایا جاسکتا ہے۔ 

    درجہ حرارت کو حاصل کرنے کی دو ترتیبات ہیں تاکہ صارفین آسانی سے اے بی ایس اور پی ایل اے کے درمیان آ جا سکیں اور رفتار کو قابو کرنے کے دو کلیدیں گرم پلاسٹک کو تیزی یا آہستگی کے ساتھ بہنے میں مدد دیتی ہیں۔ اس سے یہ ممکن ہوتا ہے کہ نہ صرف بڑی اشیاء کو بڑے علاقہ کو بھرنے کے لئے بنایا جاسکے بلکہ زیادہ پیچیدہ اور نفیس تفصیلات بھی بنائی جاسکتی ہیں۔


    سہ جہتی پرنٹنگ کے لئے اے بی ایس اور پی ایل اے کے درمیان فرق


    پی ایل اے اور اے بی ایس دونوں کا قلم کے ساتھ استعمال کیا جاسکتا ہے جو دو مختلف درجہ حرارت پر گرم ہوتے ہیں۔





    آج سب سے زیادہ عام پایا جانے والا پلاسٹک اے بی ایس یا ایکرائیلو نائٹرائل بیوٹے ڈین اسٹائرین ہے۔ تیل کے جوہر سے بنایا گیا یہ کافی مضبوط ہوتا ہے اور پی ایل اے کے مقابلے میں مڑنے پر اس کے چٹخنے کا امکان کم ہوتا ہے، 3ڈوڈلر کے لئے اس کا نقطہ پگھلاؤ 225 تا 250 ڈگری سیلسیس (437 تا 482 فارن ہائیٹ) ہے۔ یہ قلم سے مزید لچک دار مادّے کو نکالتا ہے اور یہ 3ڈوڈلر پی ایل اے کے مقابلے میں کاغذ پر سے آسانی سے اتارا جاتا ہے۔روایتی سہ جہتی پرنٹنگ میں اے بی ایس وہ پلاسٹک ہے جسے اگر گرم سطح جیسا کہ گرم بنائے گئے پلیٹ فارم پر نہیں چھاپا جائے تو وہ آسانی سے خراب ہوسکتا ہے۔ 

    پی ایل اے یا پولی لیکٹک ایسڈ حیاتی طور پر تحلیل ہونے والا پولیمر ہے اور اس کو ماحولیاتی لحاظ سے اس وقت بہتر سمجھا جاتا ہے جب اس یہ ٹھیک طرح سے باز یافت کیا جائے۔ یہ کافی قسم کے رنگوں میں دستیاب ہوتا ہے اور یہ شفاف بھی ہوسکتا ہے۔ 3ڈوڈلر کے لئے 190 تا 240 ڈگری سیلسیس (374 تا 464 ڈگری فارن ہائیٹ) کے پست نقطہ پگھلاؤ کی وجہ سے ، پی ایل اے کا زیادہ گرم ہونے کا امکان کافی ہوتا ہے اور یہ اگر بہت زیادہ گرم ہوجائے تو گر بھی سکتا ہے۔ اور کیونکہ یہ بہت اچھی طرح چپکتا ہے لہٰذا اے بی ایس کی طرح کاغذ پر سے اتارنے کے لئے مناسب نہیں ہے، تاہم یہ مخلوط ذریعہ کے لئے اضافی خصوصیت ہے جیسا کہ شیشے کی سطح پر 3ڈوڈلر کی تخلیقات کو چپکانا۔


    3ڈوڈلر آپ کو اجازت دیتا ہے کہ آپ پلاسٹک سے جو چاہئے بنانا چائیں بنائیں


    3ڈوڈلر کسی کو بھی اے بی ایس یا پی ایل اے پلاسٹک کو گرم کرکے سیدھا ہوا میں خاکہ بنانے کی اجازت دیتا ہے۔



















    • بلاگر میں تبصرے
    • فیس بک پر تبصرے

    0 comments:

    Item Reviewed: 3ڈوڈلر سہ جہتی پرنٹر Rating: 5 Reviewed By: Zuhair Abbas
    Scroll to Top