Prevention of Copy Paste


  • تازہ اشاعتیں

    اتوار, اپریل 3, 2016

    خلیے کی ساخت کی وضاحت


    انسانی جسم میں لگ بھگ 750 کھرب خلیات ہوتے ہیں لیکن اصل بات یہ ہے کہ وہ ہوتے کیا ہیں اور کیسے کام کرتے ہیں؟

    خلیات زندگی ہیں اور خلیات زندہ ہوتے ہیں۔ آپ یہاں اس لئے زندہ و جاوید موجود ہیں کیونکہ آپ کے جسم کے اندر ہر خلیے کا ایک مخصوص فعل اور ایک بہت ہی مخصوص کرنے کا کام ہے۔ مختلف قسم کے خلیات ہوتے ہیں جن میں سے ہر ایک جسم کے مختلف نظاموں کو چلاتا ہے۔ ایک واحد خلیہ زندگی کی صلاحیت رکھنے والے جسم کے اندر زندہ مادوں کی سب سے چھوٹی اکائی ہے۔ جب ان کی گروہ بندی پرتوں یا جھرمٹوں میں کی جاتی ہے تو ایک جیسے کام کرنے والے خلیات بافت یا ریشہ بناتے ہیں، جیسا کہ جلد یا پٹھے۔ ان خلیات کو کام کرنے کے لائق رکھنے کے لئے ہر وقت ہزار ہا کیمیائی تعاملات جاری رہتے ہیں۔

    تمام جانوروں میں مرکزہ ہوتا ہے جو ایک انضباطی مرکز کے طور پر کام کرتا ہے خلیات کو بتاتا ہے کہ کیا کرنا ہے اور خلیے کی جنیاتی اطلاعات (ڈی این اے) بھی اسی میں ہوتا ہے۔ خلیے کے اندر زیادہ تر مادّہ پانی، لجبجی چیز جیسا ہوتا ہے جس کو مایہ حیات کہتے ہیں، یہ خلیے کے گرد چکر لگاتا ہے اور اس کو ایک مہین بیرونی تہ تھامے رکھتی ہے جو خود دو پرتوں پر مشتمل ہوتی ہے۔ مایہ حیات کے اندر متنوع فی قسم کی ساختیں ہوتی ہیں جن کو خلوی اعضاء کہتے ہیں جن میں سے ہر ایک کا الگ کام ہوتا ہے جیسا کہ لحمیات - خلیے کے اہم کیمیائی عنصر - کو بنانا۔ خلوی اعضاء کی ایک اہم مثال ریبوسوم ہے؛ اس طرح کی بے تحاشہ ساختیں یا تو مایہ حیات کے ارد گرد تیرتی ہوئی یا بھر اندرونی جھلی کے ساتھ منسلک ہوئی پائی جاتی ہیں۔ امینو ایسڈز سے لحمیات بنانے کے لئے ریبوسوم انتہائی اہمیت کے حامل ہوتے ہیں۔


    اور خود لحمیات آپ کے خلیات کو بنانے حیاتی کیمیائی تعاملات کو جاری رکھنے کے لئے انتہائی ضروری ہوتے ہیں جس کی ضرورت جسم کو ہوتی ہے تاکہ وہ نشو و نما پا کر نہ صرف بڑھ سکے بلکہ اپنے آپ کو تندرست رکھے اور مرمت بھی کرسکے۔



    • بلاگر میں تبصرے
    • فیس بک پر تبصرے

    0 comments:

    Item Reviewed: خلیے کی ساخت کی وضاحت Rating: 5 Reviewed By: Zuhair Abbas
    Scroll to Top