Prevention of Copy Paste


  • تازہ اشاعتیں

    اتوار، 11 ستمبر، 2016

    بلیو ٹوتھ کو بلوٹوتھ ٹیکنالوجی کیوں کہا جاتا ہے؟




    باوجود اس کے کہ یہ ٹیکنالوجی نئی ہے، بلیو ٹوتھ کا ماخذ، حقیقت میں قرون وسطیٰ سے ہے۔ اس کو اس جماعت نے منتخب کیا ہے جو زیادہ تر اسکینڈی نیویائی انجینئرز پر مشتمل تھی جس نے اس وائرلیس مواصلاتی تیکنیک کو 1990ء کے عشرے میں بنایا تھا، اور یہ وائیکنگ بادشاہ کا انگریزی ترجمہ ہے۔ جب اس نام کی تلاش ہوئی جو ان کی نئی ایجاد کی پی سی اور موبائل فون میں رابطہ کرنے کی صلاحیت کی حامل تھی تو جماعت نے ڈنمارک کے بادشاہ ہرالڈ بلاٹانڈ کا سوچا، جو ڈنمارک اور ناروے کے حصّوں کو غیر متشدد مذاکرات کے ذریعہ متحد کرنے میں مشہور تھا۔ نام کی اصل بلیو ٹوتھ کے نشان سے بھی عیاں ہے، کیونکہ وہ ناروے کی زبان کے حروف پر مشتمل بادشاہ کے مختصر دستخط ہیں۔
    • بلاگر میں تبصرے
    • فیس بک پر تبصرے

    0 comments:

    Item Reviewed: بلیو ٹوتھ کو بلوٹوتھ ٹیکنالوجی کیوں کہا جاتا ہے؟ Rating: 5 Reviewed By: Zuhair Abbas
    Scroll to Top